kamalat e hamzad | hamzad kia kar sakta hai |کمالات ہمزاد

Photo by Adam Zvanovec on Unsplash

کمالات ہمزاد

اس موقع پر یہ بیا ن کرنا ضروری سمجھتا ہوں کہ آپ کا ہمزاد ، آپ کی صورت ظاہری کا باطنی طور پر مکمل مالک کی صورت اور آپ کی صورت میں کوئی فرق نہیں ۔ یہ تذکرہ ہم گزشتہ ماہ مضمون میں کر چکے ہیں ۔ یہ جاننا چاہئے کہ ہمزاد بقول عاملین کن کن قوتوں کا مالک ہے اور وہ کس قسم کے اہم یا غیر اہم کام سر انجام دے سکتا ہے ۔ تاکہ آپ کی معلومات میں خامی نہ رہے اور آپ کسی بھی موقع پر مغالطہ میں نہ آجائیں ۔ ورنہ ساری محنت ضائع ہو سکتی ہے ۔کیونکہ دوران عمل مختلف مواقع سے دوچار ہونا پڑتا ہے پہلے سے آگاہی ہر پیش آنے والے حالات کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار رکھ سکتی ہے ۔
یاد رکھیں کہ ہمزاد کو قوت کی جانب سے ایک قالب سے دوسرے قالب میں ڈھلنے کی قوت عطا کی گئی ہے ۔ یعنی وہ ہر طرح کی شکل بدلنے پر قادر ہے خواہ جیسی بھی شکل کیوں نہ ہوں ۔ وہ آپ کا ہم شبیہ ہوتے ہوئے اپنے آپ کو کسی بھی دوسرے قالب میں ڈھالنے کا مکمل اختیار رکھتا ہے خواہ قالب حیوان کا ہو یا کسی انسان کا۔
ہمزاد سخت سے سخت چیز سے بھی آن واحد میں گزر سکتا ہے اس کے نزدیک لوہے اور پتھر کی دیوار کی کوئی حقیقت نہیں ۔
گزشتہ اور آئندہ کی خبریں دے سکتا ہے ۔ اس لئے اکثر و بیشتر دوران عمل صاحب عمل کا کشف جاری ہوجاتا ہے یا بسا اوقات ایسے خوابات کا سلسلہ جاری ہوجاتا ہے جو حقائق پر مبنی ہوں۔
زیر زمین پوشیدہ خزانوں کی خبر بھی اس سے حاصل کی جا سکتی ہے ۔
ہزاروں میلوں کا فاصلہ چشم زدن میں طے کر سکتا ہے ۔
ایسی بھاری اشیاء جنہیں مشینری سے اٹھانا بھی ممکن نہ ہو دیکھتے ہی دیکھتے اٹھا کر دور دراز مقامات پر لے جا سکتا ہے ۔
امراض مہلکہ کے نسخہ جات ، جس میں زمانے کے لائق اطباء عاجز آچکے ہوں تجویز کرکے عامل کو بتادیتا ہے بشرطیکہ اس سے اس کا عامل دریافت کرے۔
سمندر کی گہرائیوں اور بلند و بالا پہاڑوں کی خبریں جہاں کسی عنوان سے بھی انسان کا طائر وہم و خیال بھی نہیں پہنچ سکتا ہو چشم زدن میں لا سکتا ہے ۔
تمام دنیا کا چکر پلک جھپکنے میں لگا سکتا ہے۔
بڑے سے بڑے اور اہم سے اہم مسئلے کو جنہیں عقل انسانی حل کرنے سے قاصر آچکی ہو فوراََ حل کرکے اپنے عامل کو گوش گزار کردیتا ہے اور ان پر عمل کرنے کے بہترین طریقے بتاتا ہے
عامل کی فرمائشات کی تعمیل میں بہت مسرت محسوس کرتا ہے اور اس کو فوراََ پوری کرتا ہے ۔
گم شدہ چیزوں اور مفرور عزیزوں کی تلاش کر سکتا ہے
شیر چیتا اور دیگر خونخوار درندوں کا دیکھتے ہی دیکھتے کام تمام کر سکتا ہے اور خوس اس کو کوئی گزند ان جانوروں سے نہیں پہنچ سکتا۔
ہمزاد ہر اس انسان کا دشمن ہو سکتا ہے جو اس کے عامل کا دشمن ہوگا بغیر حکم عامل کے ان کو نقصان نہیں پہنچا سکتا۔
ہمزاد اپنے عامل کا بہترین رفیق اور باوفا ساتھی ہو سکتا ہے بشرطیکہ وہ اصولی طور پر مسخیر کیا جائے اور اس سے کوئی ناجائز کام نہ لیا جائے اور عامل اس عہد کی مکمل طریقہ پر پابندی کرے جو اس کے اور ہمزاد کے مابین قرار پائی ہے ۔ بد عہدی ہمزاد کو بد دل کر دیتی ہے اور پھر وہ عامل کی گرفت سے اپنے آپ کو آزاد کرنے کی کوششوں میں مصروف ہو کر بالآخر گلو خلاصی کرلیتا ہے۔
ہمزاد قیدیوں کے قید و بند کی بیڑیاں بھی معاً کاٹ سکتا ہے۔
ہمزاد عامل سے ایسی محبت رکھتا ہے کہ اس کے ہر اس کام کو جس کے بجالانے کا عامل حکم دے نہایت تندہی سے اس وقت تک انجام دیتا رہتا ہے جب تک کہ اسے پایہ تکمیل تک نہ پہنچا لے۔
منٹوں میں دور دراز کی چیزیں لا کر دینا اس کا معمولی کرشمہ ہے۔
ایسی ایسی چیزوں اور پھلوں کو لا کر دینا جو بغیر فصل کے ہوں ۔
درمیان دو فریق کے محبت یا دشمنی کے اثرات پید ا کردینا۔
صیغہ راز میں رکھی ہوئی چیزوں کو حاصل کرلینا چاہے وہ کیسے ہی محفوظ مقام پر رکھی گئی ہوں۔
کسی جگہ کا نقشہ حاصل کرنا ہمزاد کے لئے ایک معمولی کام ہے ۔
یہاں مختصراََ ہمزاد کی مخفی قوت کا اجمالی سا خاکہ پیش کیا گیا ہے حالانکہ اسے خالق نے جن قوتوں سے نوازا ہے وہ میرے الفاظ سے کئی زیادہ ہیں ۔ جس کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ اب میں مناسب سمجھتا ہوں کہ مختصراََ ان باتوں کا بھی تذکرہ کروں جو اس کے مرضی کے خلاف
ہیں اور جسے ہمزاد قطعی طور پر ناپسند کرتا ہے لیکن وہ آپ کے زیر عمل رہ کر پابند معاہدہ ہے لہٰذا بہ جبر و اکراہ آپ کے ان احکام کی تعمیل کرتا ہے جو اسکو نہ کرنے چاہئے لہٰذا ہمارا پرخلوص مشورہ یہ ہے کہ آپ ہمزاد سے ایسے کام ہ لیں جو اس کی مری کے خلاف ہوں یا اس کی نفرت کا باعث بنیں بلکہ بہتر یہ ہے کہ ہر کام لینے سے قبل اس سے بھی دوستوں کی طرح مشورہ طلب کرلیں تاکہ دوستانہ فضا قائم رہے ۔
اب ہمزاد کی نفرت کے بھی اسباب ملاحظہ فرمائیے ۔
ہمزاد سے ناجائز کام لینا۔
زنا اور خلاف وضع فطری ایسے کاموں کی انجام دہی کے لئے ہمزاد کی خدمات حاصل کرنا۔
اغوا کے سلسلے میں ہمزاد سے مدد لینا۔
ناجائز مال کے حاصل کرنے میں ہمزاد کی معاونت حاصل کرنا۔
کسی کو قتل کرانے میں ہمزاد کو تیار کرنا یا اسے حکم دینا۔
غلاظت اور گندگی کے کام ہمزاد کے سپرد کرنا۔
ہمزاد سے خلاف معاہدہ کوئی کام لینا۔ وغیرہ وغیرہ۔
ہمزاد اپنے عامل کو اچھی نظروں سے اس وقت نہیں دیکھتا اگر اس سے بد عہدی کی جائے اسکی تیوریاں چڑھ جاتی ہیں اور وہ شیریں کلامی رخصت ہوجاتی ہے جو اسمیں پہلے پائی جاتی تھی لہٰذا آپ کو جب اپنے ہمزاد کی ایسی نفرت آمیز صورت نظر آئے تو اس وقت آپ کو دور اندیشی سے کام لینا چاہئے اور ایسے ناجائز کام کو اس سے معذرت کے ساتھ واپس لے لے اور آئندہ کے لئے یہ یقین دلادے کہ وہ اس قسم کے ناجائز کام میں اس کی مدد نہ لے گا۔ ہمزاد سے عامل کا سلوک ایک سچے دوست کی طرح ہونا چاہئے اس سے عامل کو یہ فائدہ حاصل رہتا ہے کہ وہ اہم راز جو صرف ہمزاد کو معلوم ہوتے ہیں اور جن کو بتانے سے ہمزاد گریز کرتا رہتا ہے خودبخود عامل کو بتاتا رہے گا عامل کو ایسے رازوں کی دریافتگی میں بھی عجلت نہیں کرنا چاہئے وہ پیش آنے والے حالات سے بھی عامل کو باخبر کرتا رہے گا لیکن کب ؟؟ جب عامل کی سچی محبت کا اس کو یقین ہوجائے ۔
بہتر یہی ہے کہ مشیر کی طرح ہمزاد سےرویہ رکھا جائے کہ فلاں کام کرنا چاہتا ہوں تمہاری کیا رائے ہے ؟ اگر ہمزاد کی مرضی ہو تو کرے ورہ ترک کردے اس طریقہ پر عامل فائدے میں رہے گا۔
ہمزاد کی مزاجی خاصیت بھی وہی ہوگی جو عامل کی ہے اگر عامل غصہ کا تیز ہے تو ہمزاد بھی غصہ ور ہوگا اب یہاں پر مقابلہ کی صورت پیدا ہوگئی دونوں تندخو ، شعلہ مزاج ، عامل کو اپنے عمل پر گھمنڈ اور ہمزاد کو اپنی قوت پر ناز۔ ایک دوسرے کی تاک میں یہاں انسب یہ ہے کہ عامل نرم پڑجائے اور اپنے غصہ پر قابو حاصل کرے ورنہ اگر ہمزاد نے عامل میں غصہ اور نفرت کا جذبہ پایا تو وہ بھڑک جائے گا اور وہ مفید مطلب باتیں جو ہمزاد خود بخود بغیر دریافت کئے عامل پر ظاہر کردیتا تھا عامل کو حاصل نہ ہو سکیں گی۔

 

kamalat e hamzad | hamzad kia kar sakta hai |کمالات ہمزاد

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*