علم الجفر : مستحصلہ کاشف الاسرار

ہر ماہ کالم علم الجفر کے تحت آپ کو نت نئے مستحصلات سے روشناس کروایا جاتا ہے اس کالم کا مقصد علم جفر کی نشر و اشاعت ہے تاکہ ہم سب مل کر کم سے کم وقت میں زیادہ سے زیادہ اس مقدس علم کے مراحل کو فہم و ادراک میں لا سکیں بہت سے قارئین اکثر ای میل کے ذریعے سوالات کرتے ہیں کہ نظیرہ کیا ہے ، موخر صدر کیسے کریں ، ناطق کیسے کریں ؟؟
گزشتہ سالوں میں یہ تمام باتیں شائع کی جا چکی ہیں تاہم ہم کوشش کریں گے کہ سلسلہ وار گزشتہ اسباق کو ترتیب سے شائع کرتے رہیں تاکہ مبتدی حضرات بھی مستفیض ہو سکیں
زیر نظر قاعدہ میں جو اصطلاحات استعمال ہونگی ہم انہیں بھی اس مرتبہ خوب تفصیل سے سمجھانے کی کوشش کرتے ہیں ۔

مرحلہ اول

اپنا سوال جامع و سلیس انداز میں لکھیں مثلاََ ایک شخص ہے جو کراچی سے اسلام آباد منتقل ہونا چاہتا ہے تو یوں سوال کریں کہ
فلاں بن فلاں کے لئے کراچی سے اسلام آباد منتقل ہونا کیسا ہے

سوال میں ہمیشہ نام سائل بمعہ نام والدہ استعمال کیا جائے گا۔ ایک بات یاد رکھئے کہ سوال ہمیشہ ایسا ہو کہ مقصد واضح ہو رہا ہو اور سوال جامع بھی ہو ۔ علمائے جفر کہتے ہیں کہ دراصل جواب ، سوال کی ہی روح کا نام ہے

مرحلہ دوئم

آپ اپنے سوال کو بسط حرفی کرلیں ۔ بسط حرفی جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کہ بسط کے معنی کھولنا یا کشادہ کرنا کے ہیں ۔ کسی لفظ یا فقرہ کو علیحدہ علیحدہ حرفوں میں لکھنا بسط حرفی کہلتا ہے ۔ یاد کیجئے اسکول کا زمانہ جب علیحدہ علیحدہ حرفوں کو جوڑ کر کلمات بنایا کرتے تھے ۔مثلاًمندرجہ بالا سوال کی بسط حرفی یہ ہوگی
ف ل ا ن ب ن ف ل ا ن ک ی ل ی ی ک ر ا ج ی س ی ا س ل ا م  ا ب ا د م ن ت ق ل ہ و ن ا ک ی س ا ھ ی ۔

مرحلہ سوئم

اس مستحصلہ کی کلید تین اسماء خدا وندی “علیم ۔ خبیر ۔ علام الغیوب” ہیں۔
سوال کو بسط حرفی کرنے کے بعد اسماء الہیہ کو بسط کریں گے جیسے
ع ل ی م خ ب ی ر ع ل ا م ا ل غ ی و ب
یہ کل اٹھارہ حروف ہونگے اب ہر حرف کا مفرد عدد ہر حرف کے نیچے لکھیں ۔مفرد اعداد ذیل کی جدول سے معلوم ہونگے ۔اسے جدول ہمرتبہ بھی کہتے ہیں

jadoolhumrutba_مثلاََ ہمارا اسم الہیہ کا پہلا حرف  ع   ہے ۔
ہم نے جدول میں دیکھا تو ع جہاں درج ہے اس کے اوپر ۷ کا عدد لکھا ہوا ہے ۔
لہٰذا ہم نے ع کے نیچے عدد ۷ تحریر کر دیا
اس طرح عمل کرتے ہوئے تمام حروف کی صورت یہ بنی

huroof_adaad

مرحلہ چہارم

اسماء الہی کے ہر حرف کے مفرد عدد کو نظروں میں رکھئے ۔ ان اعداد کے مطابق اپنے سوال کے بسط حرفی شدہ حرفوں میں سے گنتی کر کے حروف اٹھاتے جائیں
مثلاً ایک فرضی سوال ہے کہ زید بن بکر یہ کام کرے یا نہ ؟
بسط حرفی : ز ی د ب ن ب ک ر ی ھ ک ا م ک ر ی ی ا ن  ھ
ہمارے اسماء الہی کا پہلا کلمہ علیم ہے جس کا پہلا حرف ع اور عدد مفرد ۷ ہے لہٰذا ہم بسط حرفی سوال میں ۷ کی گنتی کریں گے ز ی د ب ن ب ک      ک پر گنتی ختم ہوتی ہے لہٰذا ہم نے ک   کو لکھ لیا ۔
ع کے بعد ہمارا دوسرا حرف ہے   ل    ۔ جس کا مفرد عدد ہے ۳۔
ک   کے آگے تین کی گنتی کرنے سے ر ی ھ    ۔  حرف  ھ حاصل ہوا ۔ اسی طرح تمام حروف پر عمل کریں گے یہ جو حاصلہ حروف ہوں گے یہ سوال کا عین جواب ہونگے انہیں ترتیب دیکر با معنی وہ الفاظ بنائیں جو آپ کے سوال سے مطابقت رکھتے ہوں ۔ جو حروف جواب نہ بنا رہے ہوں یعنی ناطق نہ ہو رہے ہیں انہیں جدول ہمرتبہ حروف سے بدلا جا سکتا ہے یا ان حروف کا نظیرہ استعمال کیا جائے گا۔ جدول ہمرتبہ ہم نے اس سے پہلے درج کر دی ہے ۔
مثلاََ آ پ کے پاس حروف آتے ہیں ق   ن    ا   ر۔ ذرا غور کریں تو ق ر ا ن قرآن بنتا ہے ۔
بالفرض مان لیں کہ یہ کلمہ آپ کے سوال کے جواب کے مطابق نہیں لگ رہا تو یعنی
کوئی با معنی جملہ جو آپ کے سوال سے متعلق ہو بنتا نظر نہیں آرہا ہے تو جدول ہمرتبہ سے تبدیل کریں جیسے ق  عدد ۱ کے تحت ہے ۔ اورعدد ایک کے تحت ا ی ق غ (چار حروف) ہیں
آپ ق کے متبادل ا ی غ (جو جواب بنا رہا ہو) استعمال کر سکتے ہیں ۔
جو حضرات علم الجفر کے قواعد سے واقف ہیں ان کے لئے یہ باتیں نہایت معمولی سی ہیں البتہ مبتدی حضرات کے لئے مشکل ہے ۔ مناسب ہے کہ آپ حاصلہ جوابی حروف کے ہر حرف کے نیچے ان کے متعلقہ ہمرتبہ حروف اور حرف نظیرہ درج کردیں اس طرح آپ کو آسانی ہوگی
ایک بات یاد رکھئے کہ اگر آپ واقعی علم الجفر سیکھنا چاہتے ہیں تو جدول ہمرتبہ ، و نظیرہ آپ کو اس طرح یاد ہونے چاہئے کہ آپ کے سامنے جو بھی حرف آئے آپ کے تصور میں ان کے متعلقہ متبادل حروف فوراً اجاگر ہوجائیں ۔
جیسے آپ کے سامنے حرف س  آتا ہے تو آپ کے ذہن کی اسکرین پر س کے ہمرتبہ حروف و ، خ  اور نظیرہ   ا    آجانا چاہئے ۔
اب ہم جدول نظیرہ پیش کرتے ہیں خیال رہے کہ ابجد کے کل ۲۸ حروف ہیں
۱۴۔۱۴ حروف کو دوحصص میں تقسیم کر دیا گیا ہے جدول میں ہر حرف کا مقابل حرف اس کا نظیرہ ہے ۔ جیسے الف کا نظیرہ س ۔ اور س کا نظیرہ الف ۔ ب کا نظیرہ ع ۔ اور ع ک نظیرہ ب

nazeerajudoolمثال

سال دو ھزار نو عیسوی عالمی لحاظ سے کیسا ثابت ہوگا
بسط حرفی : س ا ل د و ھ ز ا ر ن و ع ی س و ی ع ا ل م ی ل ح ا ظ س ی ک ی س ا ث ا ب ت ہ و ک ا

ismaeelaahi
مندرجہ بالا اعداد کو دیکھتے ہوئے سطر بسط حرفی سوال سے گنتی کر کے حروف حاصل کئے گئے
حروف حاصلہ ز  ن و و ی ح  ا س   ا ھ   و ا ل  ھ ز ا س ی
ناطق            ش ن ر س خ ت ا س ی ھ س ا ل ھ ز ا س ی
ترتیب          ن ش ر س خ ت س ی ا ھ س ا ل ھ ی س ز ا
الجواب:      نشر   سخت     سیاہ          سال   ہے   سزا
مختلف ممالک سے نحس خبریں ہی سننے کو ملا کریں گی یہ سال عالمی لحاظ سے ایک سزا ثابت ہوگا ۔ واللہ اعلم بالصواب

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*